زمرہ کے بغیر

Stop Extremism

جنوری کے پہلے عشرہ میں کوئٹہ کی شیعہ ہزارہ برادری کے سو سے زیادہ افراد یکے بعد دیگرے ہونے والے دو عدد بم دھماکوں کے نتیجے میں جاں بحق ہوگئے تھے۔ ان دھماکوں کی ذمہ داری دہشتگرد تنظیم لشکر جھنگوی نے قبول کی تھی ۔ اس کے بعد مقتولین کے لواحقین نے شہدا کی میتوں کو احتجاجا مطالبات پورے نہ ہونے تک دفنانے سے انکار کیا اور اس کے ساتھ پورے ملک میں اور بیرون ملک بھی ان خاندانوں کے ساتھ یکجہتی کے اظہار کے لئے احتجاج کا سلسلہ شروع ہوگیا۔ حکومت نے شروع میں سرد مہری کا مظاہرہ کیا مگر آخر کار وزیر اعظم صاحب کو کوئٹہ جانا پڑا اور شہدا کے خاندانوں کو قاتلوں کے خلاف کاروائی کی یقین دہانی کروائی اور اس کے علاوہ ان کے مطالبہ کے مطابق کوئٹہ کی حکومت کو ختم کر کے وہاں گورنر راج نافذ کرنے کا اعلان کیا۔

View original post 869 more words

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s